ھی سندھ جی دھرتی آ!سندھ اسمبلی میں روضہ جناب سیدہ فاطمہ ؑکی تعمیر کی قرارداد منظور

پنجاب اسمبلی کے بعد سندھ اسمبلی میں بھی آل سعود کی جانب سے منہدم کیے جانت والے قبرستان جنت البقیع کی تعمیر نوکی قرارداد متفقہ طور پر منظورکرلی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کی صوبائی اسمبلی کے اراکین کی جانب سے جنت البقیع اورجگر گوشہ رسول حضرت فاطمہ زہرا ؑ کا روضہ مبارک تعمیر کروانے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی گئی۔

قررداد منظور کرنے والوں میں غیر مسلم اقلیتی اراکین سندھ اسمبلی بھی شامل ہیں

قراردار پیش کرنے والوں میں پیپلز پارٹی کے سید ناصر حسین شاہ، پی ٹی آئی کے سید فردوس شمیم نقوی اور جی ڈی اے کی نصرت سحر عباسی نمایاں ہیں جبکہ دیگر کئی اراکین نے اس قرارداد کو پیش کرنے میں اہم کردار ادا کیا

قرارداد کے متن میں لکھا گیا ہےکہ صوبہ سندھ صوفیائے کرام کی دھرتی اور باب الاسلام ہے ، صوفیائے کرام کی درسگاہ نبی آخر الزماں حضرت محمد ﷺ اور ان کا خانوادہ ہے جس میں پنجتن ؑ کا ایک خاص مقام ہے۔

حضرت محمد ﷺ کی لخت جگر ان کی دختر حضرت فاطمہ زہرا ؑ ہیں جن کے احترام میں خود رسول اکرم ﷺ کھڑے ہوا کرتے تھے۔

قراردار میں لکھا گیا ہے کہ خواتین جنت کی سردار حضرت فاطمہ زہرا ؑ کی قبر مبارک جنت البقیع میں بغیر سائے کے ہے جو ہمارے دلوں کو تکلیف پہنچاتی ہے۔

قرارداد میں کہا گیا کہ نبی آخر الزمان حضرت محمد ﷺ کی لخت جگر اور حسنینؑ کریمین کی والدہ ماجدہ حضرت فاطمہ زہرا ؑ کا روضہ بنوانے کیلئے حکومت اپنا کردار اد کرے۔

قرارداد میں کہا گیا کہ حکومت پاکستان جنت البقیع میں حضرت فاطمۃ الزہراؑ کا روضہ مبارک تعمیر کروانےکیلئے سعودی حکومت سے سفارتی تعلقات استعمال کرے۔

قراردار میں مزید کہا گیا کہ حکومت پاکستان سعودی عرب حکومت پر اپنا اثر رسوخ استعمال کرے اور اگر روضہ مبارک بنانے میں مالی وسائل کا مسئلہ ہے تو وہ اخراجات میں ارکان اسمبلی ادا کریں گے۔

Read Previous

پنجاب اسمبلی:روضہ حضرت فاطمۃ الزہرہ تعمیر کیا جائے، قرار داد پیش

Read Next

test

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے